ہارٹ اٹیک سے قبل ظاہر ہونے والی علامات۔ ہارٹ اٹیک یعنی دل کا دورہ

ہارٹ اٹیک کیوں ہوتا ہے؟

ہارٹ اٹیک کیوں ہوتا ہے؟

دل کے دورے سے پہلے ظاہر ہونے والی علامات

محترم دوستو: السلام علیکم:۔۔۔۔۔۔ ہارٹ اٹیک یعنی دل کا دورہ اس کو سب سے خطرناک بیماریوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ تقریبا ہزاروں لوگ دل کا دورہ پڑنے سے اپنی جان کھو بیٹھتے ہیں، انسان کو کب ہارٹ اٹیک ہو جائے کسی کو معلوم نہیں لیکن کچھ علامتیں ایسی ہیں جنہیں آپ کو کبھی نظر انداز نہیں کرنا چاہیے عام طور پر ہارٹ اٹیک کی علامتوں میں سینے بازو گردن یا جبڑے میں شدید درد یا اچانک سانس کی قلت پسینہ اور چکر آنا شامل ہیں، اس کے علاوہ سائلینٹ ہارٹ اٹیک یا سائلینٹ مائی کا ڈیل انفیکشن جس کی کوئی بھی واضح علامت نہیں اگر علامات ہوتی بھی ہے تو وہ ہلکی محسوس ہوتی ہیں اور اتنی مختصر ہوتی ہیں کہ جنہیں بیشتر افراد نظر انداز کر دیتے ہیں، امریکی ہارورڈ میڈیکل اسکول کی تحقیق کے اعدادوشمار سے حاصل کردہ چیزوں کے ساتھ ریسرچرز نے چار متبادل علاوہ بتائی ہیں جو کہ عام طور پر ایک ہفتہ قبل ہارٹ اٹیک ہونے سے پہلے ظاہر ہو سکتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: دنیا کے 5 busiest ایئرپورٹ

ہارٹ اٹیک یعنی دل کا دورہ پڑنے کی علامت

سب سے پہلے نمبر پر ہے غیر معمولی تھکاوٹ تحقیق کے مطابق ہارٹ اٹیک سے قبل بہت سے افراد تھکاوٹ یا جسمانی تکلیف محسوس کرتے ہیں، اور انہیں زیادہ کام کرنے کم نیند اور عمر کی وجہ سے جسم میں درد ہو سکتا ہے۔ جبکہ تین میں سے تقریبا دو افراد جنہیں دل کا دورہ پڑ تا ہے وہ چند دن یا ہفتوں پہلے سینے میں درد سانس کی قلت یا تھکاوٹ محسوس کرتے ہیں،

دوسرے نمبر پر ہے نیند میں خلل، دوستو: نیند نہ آنا ہائی بلڈ پریشر اور دل کی بیماریوں سے منسلک ہے وقت گزرنے کے ساتھ ناقص نیند غیر صحت مند عادات کا باعث بھی بن سکتی ہے، جو کہ آپ کے دل کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔ نیند نہ آنا یا نیند میں خلل پڑنا ہارٹ اٹیک سے قبل ایک خاموش علامت بھی سمجھی جاتی ہے۔

نمبرتین بے چینی کچھ افراد تناؤ کا اتنا شدید شکار ہوتے ہیں کہ اس کی وجہ سے انہیں اکثر بے چینی رہتی ہے۔ جبکہ ہارٹ اٹیک کی ایک خاموش علامت سمجھی جاتی ہے بازوؤں میں کمزوری محسوس ہونا یا تکلیف کا محسوس ہونا ناظرین ہارٹ اٹیک کی دیگر عام علامات جیسا کہ بازو میں کمزوری پٹھوں گلے سینے میں ہلکا درد یا بدہضمی اور سینے کی جلن ہو سکتی ہے۔ یا پھر دونوں بازو میں درد کمر گردن وغیرہ میں درد یا تکلیف کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے یہ علامات ایک شخص سے دوسرے شخص میں مختلف ہو سکتی ہیں مثال کے طور پر کچھ افراد ہارٹ اٹیک سے قبل اپنے کمر میں درد محسوس کرتے ہیں جبکہ کچھ افراد پیٹھ پر بھاری دباؤ بھی محسوس کرتے ہیں۔ researcher کا کہنا ہے کہ اگر آپ کو ان میں سے کوئی علامت محسوس ہوتی ہے تو فوراً آپ کسی کارڈیالوجسٹ سے چیک کرائیں اور اپنا علاج کروائیں۔

ایک تبصرہ شائع کریں

جدید تر اس سے پرانی